یادوں بھری رات کا ۳۰۹ واں پروگرام – تیسرا حصہ

کربلائے چار آپریشن کا راز فاش ہونے میں منافقین کا اہم کردار

ایرانی اورل ہسٹری سائٹ کی رپورٹ کے مطابق، دفاع مقدس سے متعلق یادوں بھری رات کا ۳۰۹ واں پروگرام، جمعرات کی شام، ۲۶ دسمبر ۲۰۱۹ء کو آرٹ شعبے کے سورہ ہال میں منعقد ہوا ۔ اس پروگرام میں عبد الرحیم فرخ سہراب، سید یحیی رحیم صفوی اور فتح اللہ جعفری نے اپنی تقاریر میں اپنی اسیری کے زمانے، فاو اور کربلائے ۵ آپریشن کے بارے میں بیان کیا۔

یادوں بھری رات کا ۳۰۹ واں پروگرام – دوسرا حصہ

کربلائے پانچ آپریشن عراقیوں کے لئے غیر قابل تصور تھا

ایرانی اورل ہسٹری سائٹ کی رپورٹ کے مطابق، دفاع مقدس سے متعلق یادوں بھری رات کا ۳۰۹ واں پروگرام، جمعرات کی شام، ۲۶ دسمبر ۲۰۱۹ء کو آرٹ شعبے کے سورہ ہال میں منعقد ہوا ۔ اس پروگرام میں عبد الرحیم فرخ سہراب، سید یحیی رحیم صفوی اور فتح اللہ جعفری نے اپنی تقاریر میں اپنی اسیری کے زمانے، فاو اور کربلائے ۵ آپریشن کے بارے میں بیان کیا۔

یادوں بھری رات کا۳۰۹ واں پروگرام – پہلا حصہ

موصل چھاؤنی کے واقعات

ایرانی اورل ہسٹری سائٹ کی رپورٹ کے مطابق، دفاع مقدس سے متعلق یادوں بھری رات کا ۳۰۹ واں پروگرام، جمعرات کی شام، ۲۶ دسمبر ۲۰۱۹ء کو آرٹ شعبے کے سورہ ہال میں منعقد ہوا ۔ اس پروگرام میں عبد الرحیم فرخ سہراب، سید یحیی رحیم صفوی اور فتح اللہ جعفری نے اپنی تقاریر میں اپنی اسیری کے زمانے، فاو اور کربلائے ۵ آپریشن کے بارے میں بیان کیا۔

بحری افواج کے نام کا شہید ہمتی کے نام سے جڑ جانا

یادوں بھری رات کا۳۰۸ واں پروگرام

وَ جَعلنا مِن بَین اَیدیهم سَداً و مِن خَلفِهِم سَداً فَاَغشَیناهم فهم لایُبصِرون۔ میں خدا کا شکر ادا کرتا ہوں کہ آٹھ سالہ دفاع مقدس کے دوران، آپریشنوں میں بحری افواج کے ہائر کرافٹ اسکوارڈ کے اسٹاف کے ساتھ تھا۔ ہمارے گھر والے جزیرہ خارک میں تھے

۴۲ طیاروں کی ٹولی کے ایک پائلٹ کے واقعات

یادوں بھری رات کا۳۰۷ واں پروگرام – چوتھا حصہ

ایرانی اورل ہسٹری سائٹ کی رپورٹ کے مطابق، دفاع مقدس سے متعلق یادوں بھری رات کا ۳۰۷ واں پروگرام، جمعرات کی شام، ۲۴ اکتوبر ۲۰۱۹ء کو آرٹ شعبے کے سورہ ہال میں منعقد ہوا ۔ اس پروگرام میں امیر حبیبی، محمد غلام حسینی اور عطاء اللہ محبی نامی پائلٹوں نے عراق کی ایران پر مسلط کردہ جنگ کے دوران اپنے واقعات کو بیان کیا ۔

یادوں بھری رات کا۳۰۷ واں پروگرام – دوسرا حصہ

سمندری گشت

پائلٹ آر پی جی سے فائر کرنے والا اور طیارہ آر پی جی بن گیا!

اس آٹھ سالہ دفاع مقدس کے دوران فضائی آرمی تیر کے نشانے پر تھی۔ جس دن عراق نے ایران پر حملہ کیا، ایران اور خاص طور سے فضائی آرمی کے حالات بہت خراب تھے

یادوں بھری رات کا۳۰۷ واں پروگرام – تیسرا حصہ

سن ۱۹۸۳ء میں ہماری ڈیوٹی

ایرانی اورل ہسٹری سائٹ کی رپورٹ کے مطابق، دفاع مقدس سے متعلق یادوں بھری رات کا ۳۰۷  واں پروگرام، جمعرات کی شام، ۲۴  اکتوبر ۲۰۱۹ء کو آرٹ شعبے کے سورہ ہال میں منعقد ہوا ۔ اس پروگرام میں امیر حبیبی، محمد غلام حسینی اور عطاء اللہ محبی نامی پائلٹوں  نے عراق کی ایران پر مسلط کردہ جنگ کے دوران اپنے واقعات کو بیان کیا ۔ آپ نے اس رپورٹ کے پچھلے حصے میں، پائلٹ بریگیڈیئر محمد غلام حسینی کے بیان کردہ واقعات کے پہلے حصہ کو پڑھ لیا۔ انھوں نے اپنی بات جاری رکھتے...

یادوں بھری رات کا۳۰۷ واں پروگرام – پہلا حصہ

سمندری گشت

مگر تمہیں سمجھ میں نہیں آتا؟! تم میں شعور نہیں ہے؟! اور اس طرح کی باتیں کرنا شروع کردیں۔ اُن میں سے ایک دو افراد میرے سینہ پر بھی مار رہے تھے۔ مجھے تعجب ہوا اور میں اپنے آپ سے کہہ رہا تھا کہ مجھ سے کیا غلطی ہوگئی ہے کہ یہ لوگ اس طرح آگ بگولہ ہو رہے ہیں؟ اُن میں سے ایک نے کہا اے عقلمند انسان! تم نے یہ پرواز کی تھی ناں، اس کے بجائے کہ تم ہوائی جہاز کو پانی میں غرق کردیتے اور ہمیں ہماری بیویوں سے نجات دلاتے، تم انہیں دوبارہ واپس لیکر آگئے ہو؟!

یادوں بھری رات کا۳۰۶ واں پروگرام – تیسرا حصہ

افغان شہداء کے مزاروں کی جستجو میں قدم بہ قدم

ایرانی اورل ہسٹری سائٹ کی رپورٹ کے مطابق، دفاع مقدس سے متعلق یادوں بھری رات کا ۳۰۶ واں پروگرام، جمعرات کی شام، ۲۶ ستمبر۲۰۱۹ء کو آرٹ شعبے کے سورہ ہال میں منعقد ہوا ۔ اس پروگرام میں علی سید ناصری، سرباز روح اللہ رضوی اور محمد سرور رجائی نے کشمیر اور افغانستان میں انقلاب اسلامی ایران کے اثرات کے بارے میں بتایا۔

یادوں بھری رات کا۳۰۶ واں پروگرام – دوسرا حصہ

کشمیر کے واقعات

ایرانی اورل ہسٹری سائٹ کی رپورٹ کے مطابق، دفاع مقدس سے متعلق یادوں بھری رات کا ۳۰۶ واں پروگرام، جمعرات کی شام، ۲۶ ستمبر۲۰۱۹ء کو آرٹ شعبے کے سورہ ہال میں منعقد ہوا ۔ اس پروگرام میں علی سید ناصری، سرباز روح اللہ رضوی اور محمد سرور رجائی نے کشمیر اور افغانستان میں انقلاب اسلامی ایران کے اثرات کے بارے میں بتایا۔
4
 
حسن مولائی کی یادیں

سو افراد، سینکڑوں افراد، ہزاروں

وہ لوگ جو چند گھنٹوں پہلے جمرات جا رہے تھے تاکہ رمی جمرات کا فریضہ ادا کرسکیں اب تولیہ اوڑھے سو رہے تھے۔ جب جنازے ختم ہوئے، تو مجھے سمجھ نہیں آئی کہ مجھے کہاں لوٹنا چاہئیے۔ اچانک میرے پیروں نے کام کرنا چھوڑ دیا اور میں نے پہلی مرتبہ وہاں گریہ کرنا شروع کردیا۔ واپس پلٹ کر ان سفید پیکروں کو دیکھنا شروع کیا۔ پوری سڑک جنازوں سے سفید ہوچکی تھی۔ ایک جوان مرد کی آواز پر چونکا جو میرے ساتھ کھڑا تھا اور میرے پیروں کے سامنے چپلیں رکھ رہا تھا۔
حجت الاسلام والمسلمین جناب سید محمد جواد ہاشمی کی ڈائری سے

"1987 میں حج کا خونی واقعہ"

دراصل مسعود کو خواب میں دیکھا، مجھے سے کہنے لگا: "ماں آج مکہ میں اس طرح کا خونی واقعہ پیش آیا ہے۔ کئی ایرانی شہید اور کئی زخمی ہوے ہین۔ آقا پیشوائی بھی مرتے مرتے بچے ہیں

ساواکی افراد کے ساتھ سفر!

اگلے دن صبح دوبارہ پیغام آیا کہ ہمارے باہر جانے کی رضایت دیدی گئی ہے اور میں پاسپورٹ حاصل کرنے کیلئے اقدام کرسکتا ہوں۔ اس وقت مجھے وہاں پر پتہ چلا کہ میں تو ۱۹۶۳ کے بعد سے ممنوع الخروج تھا۔

شدت پسند علماء کا فوج سے رویہ!

کسی ایسے شخص کے حکم کے منتظر ہیں جس کے بارے میں ہمیں نہیں معلوم تھا کون اور کہاں ہے ، اور اسکے ایک حکم پر پوری بٹالین کا قتل عام ہونا تھا۔ پوری بیرک نامعلوم اور غیر فوجی عناصر کے ہاتھوں میں تھی جن کے بارے میں کچھ بھی معلوم نہیں تھا کہ وہ کون لوگ ہیں اور کہاں سے آرڈر لے رہے ہیں۔
یادوں بھری رات کا ۲۹۸ واں پروگرام

مدافعین حرم،دفاع مقدس کے سپاہیوں کی طرح

دفاع مقدس سے متعلق یادوں بھری رات کا ۲۹۸ واں پروگرام، مزاحمتی ادب و ثقافت کے تحقیقاتی مرکز کی کوششوں سے، جمعرات کی شام، ۲۷ دسمبر ۲۰۱۸ء کو آرٹ شعبے کے سورہ ہال میں منعقد ہوا ۔ اگلا پروگرام ۲۴ جنوری کو منعقد ہوگا۔