گزشتہ دہائیوں میں شہر اراک میں ہونے والی قرآنی نشست کے بارے میں

ایک مکمل روایتی طریقہ کار

استاد نہرمیانی ایک حقیقی مؤمن کی حیثیت سے بہت ہی قناعت پسند انسان تھے اور اُن کی زیادہ اخراجات والی زندگی نہیں تھی۔ اُن کا گھر بھی اُسی پرانی طرز کا ٹوٹا پھوٹا سا تھا۔ انھوں نے قرآن کی قرائت اور نشستوں کی بابت کبھی بھی پیسوں کا مطالبہ نہیں کیا

نشستیں تعمیراتی ہوتی تھیں

۱۹۶۰ ء کے عشرے سے متعلق آیت اللہ ناصر مکارم شیرازی کےجیل کے واقعات
انقلاب کے بعد جب شیراز شہر میں لوگوں نے ساواک کے دفتر پر قبضہ کیا تو انھوں نے تمام فائلیں سڑکوں پر پھینک دیں۔ کسی ایک کو میری فائل ملی تو اس نے مجھے بھجوادی۔ جناب حسینیان نے بھی ریکارڈ سنٹر سے، میرے اس زمانے کے مدارک اور ریکارڈ والے لفافے مجھے بھجوائے

سازشوں کی ناکامی پر ۵ جون کے قیام کو ناکام قیام کے طور پر پیش کرنے کا منصوبہ

روحانیت کی مخالفت اور مزاحمت نے شاہ او اس کے حواریوں کو صوبائی تنظیموں کے بل اور سفید انقلاب کے چھ نکاتی ایجنڈے کے حوالے سے یہ بتا دیا تھا کہ اس بار مقابلہ سخت ہے اور مد مقابل کوئی عام لوگ نہیں بلکہ طاقتور اور خاص مذہبی افراد ہیں
یادوں بھری رات کے سلسلے کا ۲۸۳ واں پروگرام

سرحدوں کی حفاظت کرنے والے کمانڈروں کی یادوں کا بیان

ہمارا ماہ شہر کے کنارے سے گزرنے کا ارادہ تھا کہ ہم نے دیکھا کہ عراقیوں نے راستہ بند کیا ہوا ہے۔ جس کی وجہ سے ہم نے ایک لاؤنچ کرایہ پر لی اور ہم نے ہر آدمی کا کرایہ ۵۰ تومان اور اپنی جیپ کیلئے بھی ۱۵۰ تومان کرایہ دیا تاکہ وہ ہمیں راتوں رات فاو کے پیچھے سے آبادان تک پہنچا دے
ایک پبلیشر کی یادیں

کتاب اور میرا ماجرا جو مزاج

خود شاملو بیان کرتے ہیں جب وہ کیہان اخبار میں تھے، ایک وزیر اخبار کے دفتر کا دورہ کرنے آیا۔ جب شاملو کے تعارف کی باری آئی اور اُن کے تعلیمی معیار کو پوچھا گیا، انھوں نے بہت ہی آرام سے کہا میں نے چار کلاسیں پڑھی ہیں
زبانی تاریخ اور اُس کی ضرورتوں پر انٹرویو – بیسواں حصہ

اچھی طرح کان لگا کے سننا (۲)

اچھا ہوگا اگر آپ انٹرویو کے دوران، کبھی سر کو ہلائیں کسی تائید کرنے والے لفظ جیسے "جی" یا "صحیح فرمایا" کا سہارا لیتے ہوئے راوی کی بات کو سمجھنے کا اظہار کریں

۵ جون ۱۹۶۳ء کے قیام کی کہانی، آیت اللہ محمد علی گرامی کی زبانی

امام کو گرفتار ہوئے تقریباً چالیس دن ہوچکے تھے۔ ایک دن میں امام کے گھر پہ ہی تھا اور اسی تائیدی پیغام کے متعلق آیت اللہ "اشراقی" سے بات ہونے لگی۔ میرا موقف یہ تھا کہ چونکہ امام مجتہد مسلم ہیں اس لئے ان کی مرجعیت کو تائید کرنا ایک لایعنی سی بات ہے
دوران جنگ اور جنگ کے بعد، حمل و نقل کی پروازیں

اصغر نمازیان کی یادوں کے ساتھ گزرے لمحات کا سفر

لچسپ بات ہے کہ میں جنوری ۱۹۷۹ء میں امریکا میں پائلٹ بنا اور جنوری ۲۰۰۱ء میں اسلامی جمہوری ایران کی فضائی آرمی سے ریٹائر ہوا۔ مجھے سن ۱۹۸۸ء میں آیت اللہ خامنہ ای کی خدمت میں پہنچنے کا شرف نصیب ہوا۔
انقلاب کی پہچان اور وضاحت

ایران میں موجود امریکی فوجی مشاورتی کمیٹی کے سربراہ کے نام

اگر روحانیت کے نفوذ اور اثر و رسوخ کا اندازہ لگانا چاہتے ہو تو بس اتنا جان لو کہ اس ملک (ایران) میں ساڑھے تین کروڑ کی آبادی میں ۸۰ ہزار مساجد، ایک لاکھ ۸۰ ہزار علماء اور بارہ ہزار سے زیادہ آیت اللہ موجود ہیں ..."
زبانی تاریخ اور اُس کی ضرورتوں پر انٹرویو – اُنیسواں حصہ

اچھی طرح اور دھیان سے سننا (۱)

دوسروں کی بات اچھی طرح دھیان سے سننے کا شمار اُن مہارتوں میں ہوتا ہے جو تمام انسانی رابطوں کے قیام میں اہم کردار ادا کرتا ہے، جن میں سے ایک انٹرویو ہے۔ بنیادی طور پر انٹرویو کے تمام مقدمات کو بہت دقت کے ساتھ فراہم ہونا چاہیے تاکہ ہم راوی کی بات کو صحیح سے سن کر اُسے ریکارڈ کریں۔
 
جنوبی محاذ پر ہونے والے آپریشنز اور سردار عروج کا

مربیوں کی بٹالین نے گتھیوں کو سلجھا دیا

سردار خسرو عروج، سپاہ پاسداران انقلاب اسلامی کے چیف کے سینئر مشیر، جنہوں نے اپنے آبائی شہر میں جنگ کو شروع ہوتے ہوئے دیکھا تھا۔
لیفٹیننٹ کرنل کیپٹن سعید کیوان شکوہی "شہید صفری" آپریشن کے بارے میں بتاتے ہیں

وہ یادگار لمحات جب رینجرز نے دشمن کے آئل ٹرمینلز کو تباہ کردیا

میں بیٹھا ہوا تھا کہ کانوں میں ہیلی کاپٹر کی آواز آئی۔ فیوز کھینچنے کا کام شروع ہوا۔ ہم ہیلی کاپٹر تک پہنچے۔ ہیلی کاپٹر اُڑنے کے تھوڑی دیر بعد دھماکہ ہوا اور یہ قلعہ بھی بھڑک اٹھا۔